اہم خبریں

لال قلعہ تشدد:دیپ سدھونے عدالت میں کہا،پرچم لہراناجرم نہیں

نئی دہلی8اپریل(ہندوستان اردو ٹائمز) یوم جمہوریہ کے موقع پر زرعی قوانین کے خلاف احتجاج میں ٹریکٹر پریڈکے دوران ہونے والے تشدد کے الزام میں گرفتارپنجابی اداکار اور کارکن دیپ سدھو کی ضمانت کی درخواست پرآج دہلی کی ایک عدالت میں سماعت ہوئی ہے۔ اس دوران دیپ سدھو نے وکلا کے توسط سے عدالت کو بتایا ہے کہ پرچم لہرانا کوئی جرم نہیں ، انہوں نے فیس بک لائیو کی غلطی کی ہے۔

کسانوں نے دہلی میں تین نئے زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کے لے ٹریکٹر ریلی کا انعقاد کیا تھا ، جس کے بعد تشدد پھیل گیا۔ خصوصی جج نیلوفر عابدہ پروین نے سماعت 12 اپریل تک ملتوی کردی ہے۔ سدھو کے وکیل ابھیشیک گپتا نے عدالت کو بتایا ہے کہ میں نے پرچم نہیں لہرایا اور نہ ہی کسی سے جھنڈا لہرانے کی اپیل کی ، جھنڈا لہرانا جرم نہیں ہے اور یہ اس بحث کا معاملہ ہے جس میں میں داخل ہونا نہیں چاہتا ہوں۔ میں نے غلطی کی ہے ، لیکن ہر غلطی جرم نہیں ہے۔ میں نے فیس بک لائیو کرکے غلطی کی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close