اہم خبریں

سرکار کے فیصلوں سے سارے شعبے تباہ ہوئے،بے روزگاری عروج پرپہونچی:منموہن سنگھ

ترووننت پورم2مارچ(آئی این ایس انڈیا) سابق وزیر اعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ نے آج مرکزی حکومت پر حملہ کرتے ہوئے کہاہے کہ سنہ 2016 میں بغیرسمجھے نوٹ بندی کے فیصلے سے ملک میں بے روزگاری عروج پر ہے اور غیر رسمی شعبہ پریشانی کا شکارہے۔انہوں نے ریاست میں مستقل طورپرمشورہ نہ کرنے پر مرکز میں مودی حکومت کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔ سنگھ نے اقتصادی مضامین کے ’تھنک ٹینک‘ راجیوگاندھی انسٹی ٹیوٹ آف ڈویلپمنٹ اسٹڈیز کے ذریعہ ڈیجیٹل میڈیم کے ذریعے منعقدہ ایک ترقیاتی کانفرنس کا افتتاح کرتے ہوئے یہ باتیں کیں۔ انہوں نے کہاہے کہ بڑھتے ہوئے مالی بحران کو چھپانے کے لیے ہندوستان کی حکومت اورریزرو بینک آف انڈیا ( آر بی آئی) اٹھائے گئے عارضی اقدامات کی وجہ سے چھوٹے اور درمیانے درجے کے شعبوں کومتاثر کرسکتا ہے اور ہم اس صورتحال کو نظر انداز نہیں کرسکتے ہیں۔انھوں نے کہاہے کہ بے روزگاری عروج پر ہے اور غیر رسمی شعبہ تباہ ہواہے۔یہ بحران 2016 میں بغیر سوچے سمجھے نوٹ بندی کے فیصلے کی وجہ سے پیدا ہوا ہے۔ اس کانفرنس کا انعقاد کیرالا میں اسمبلی انتخابات سے قبل ایک وژن پیپر ، ریاست کی ترقی سے متعلق خیالات کی شکل پیش کرنے کے لیے کیاگیاہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close