اہم خبریں

نیوزچینلوں کوذاتی گفتگولیک کرنے سے روکاجائے ، دیشا روی نے ہائی کورٹ میں عرضی داخل کی

نئی دہلی 18فروری(آئی این ایس انڈیا) کسانوں کے مظاہرے سے متعلق ’ٹول کٹ‘شیئرکرنے کے الزام میں گرفتار ماحولیاتی کارکن دشا راوی نے دہلی ہائی کورٹ میں ایک عرضی دائر کی ہے جس میں استدعاکی گئی ہے کہ پولیس کودرج تفتیش سے متعلق ایف آئی آر کا کوئی موادلیک کرنے سے روکیں۔ جسٹس پرتابھا ایم سنگھ کے روبرو سماعت کے لیے درج متعدد درخواستوں میں یہ بھی استدعا کی گئی ہے کہ وہ واٹس ایپ پر مبینہ نجی گفتگو کو یا ان کے اور تیسرے فریق کے مابین دیگر چیزوں کو شائع کرنے سے میڈیا کو روکیں۔ 22 سالہ دشا نے اپنی درخواست میں کہاہے کہ اس کی متعصبانہ گرفتاری اور میڈیا ٹرائل سے سخت رنج ہے جہاں ان پر مدعا علیہ (پولیس) اورمتعدد میڈیا ہاؤسز نے واضح طور پر حملہ کیا ہے۔یہ دعویٰ بھی کیا گیا کہ سائبر کے ذریعہ ان کی گرفتاری مکمل طور پر غیر قانونی اور بے بنیادتھی ۔دہلی ہائی کورٹ نے این بی ایس اے اور دو میڈیا اداروں کو دشا راوی کی درخواست پر نوٹس جاری کیا ہے اس معاملے کی سماعت جمعہ کو ہوگی۔ انہوں نے کہاہے کہ موجودہ حالات میں بہت زیادہ خدشات پائے جاتے ہیں کہ ان رپورٹوں کے ساتھ درخواست گزار کو قصوروار قبول کرے۔ درخواست میں انہوں نے کہاہے کہ ان حالات میں ، اور مدعا علیہ کواس کی رازداری ، اس کی ساکھ اور اس کے منصفانہ مقدمے کے حق سے متعلق خلاف ورزی کرنے سے روکنے کے لیے درخواست گزار موجودہ درخواست کے ساتھ کارروائی کررہاہے۔درخواست میں الزام لگایا گیا ہے کہ تفتیش سے متعلقہ موادمیڈیا کو لیک کیا جارہا ہے اور پولیس کے ذریعہ منعقدہ پریس کانفرنس متعصبانہ ہے اوران کے منصفانہ مقدمے کے حق اوران کی بریت کے امکان کے خلاف ورزی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close