اہم خبریں

وزیر اعظم نریندر مودی نے کیا رام مندر ٹرسٹ کا اعلان ،اویسی نےکہا کہ اس کا اعلان ۸ فروری کے بعد ہونا چاہیئے، شیوسینا نے یاد دلائی حکومت کی ذمہ داری

 

نئی دہلی۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ حکومت نے اجودھیا میں رام جنم بھومی پر خوبصورت مندر کی تعمیر کے لئے ٹرسٹ کے قیام کی منظوری دے دی ہے۔ مودی نے یہاں بدھ کو لوک سبھا کا اجلاس شروع ہونے پر یہ اطلاع دی۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کی ہدایت پر حکومت نے ٹرسٹ کے قیام کا فیصلہ کیا ہے۔ اس ٹرسٹ کا نام’ شری رام جنم بھومی تیرتھ چھیتر‘ ہوگا۔ اس میں سبھی پنتھوں کے لوگوں کو شامل کیا جائے گا۔

وزیر اعظم نے بتایا کہ ان کی صدارت میں مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں یہ اہم فیصلہ لیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ بھی فیصلہ ہوا ہے کہ سنی وقف بورڈ کو بھی اس کے حصے کی زمین الاٹ کی جائے گی۔ ریاستی حکومت کو اس سلسلہ میں درخواست بھیج دی گئی ہے اور اس نے اس پر عمل کرنے کی رضامندی بھی ظاہر کی ہے۔ اس اعلان کے بعد حکمراں فریق کے ارکان نے میزیں تھپتھپا کر اس کا خیر مقدم کیا۔

سپریم کورٹ نے 9 نومبر کو ایک صدی سے زائد پرانے معاملہ کا نمٹارا کرتے ہوئے اجودھیا میں متنازع مقام پر رام مندر کی تعمیر کے حق میں اپنا فیصلہ سنایا تھا۔ ساتھ ہی مسجد کے لئے اجودھیا میں ہی کسی اور مقام پر پانچ ایکڑ متبادل زمین دینے کو کہا تھا۔

ایم آئی ایم کے قومی صدر اسدالدین اویسی نے وزیراعظم نریندر مودی کے اجودھیا میں رام جنم بھومی پر خوبصورت مندر کی تعمیر کے لئے ٹرسٹ کے قیام کی منظوری دینے کے اعلان پر سوال اٹھایا اور کہا کہ اس کا اعلان ۸ فروری کے بعد ہونا چاہیئے پارلیمینٹ کا سیشن ۱۱ فروری تک چلے گا تو ۸ فروری کے بعد اس کا اعلان ہونا چاہیئے تاکہ دہلی چناؤ ختم ہوجاتا مگر بی جے پی کی سوچی سمجھی سازش ہے

شیوسینا کے قومی ترجمان سنجے راوت نے وزیراعظم نریندر مودی کے اجودھیا میں رام جنم بھومی پر خوبصورت مندر کی تعمیر کے لئے ٹرسٹ کے قیام کی منظوری دینے کے اعلان کا استقبال کیا مگر سوال بھی اٹھایا کہ آپ سب تو جانتے ہیں کہ اجودھیا میں رام جنم بھومی پر مندر کی تعمیر کا فیصلہ کورٹ نے دیا ہے اور مرکزی حکومت کو اس فیصلہ کا احترام کرنا چاہیئے یہ حکومت کی ذمہ داری ہے

نیوز ایجنسی کے بھاشا انپٹ کے ساتھ

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close