اہم خبریں

این ڈی اے کی میٹنگ:جدیونے این پی آرکے فارمیٹ کی مخالفت کی،شرومنی اکالی دل کاساتھ ملا

نئی دہلی۔۳۱؍جنوری: بہار کے وزیراعلیٰ اورجنتا دل یونائیٹڈ کے سربراہ نتیش کماراین آرسی کے بعد اب این پی آرکے نئے سوالات سے بھی خوش نہیں ہیں۔این پی آر کو لے کر جے ڈی یو نے جمعہ کو مودی حکومت سے این پی آرکے فارم میں تبدیلی کا مطالبہ کیاہے۔جے ڈی یوکی جانب سے للن سنگھ نے این ڈی اے کی میٹنگ میں یہ مطالبہ کیاہے۔جے ڈی یو لیڈر للن سنگھ نے بتایا کہ انہوں نے اجلاس میں یہ مسئلہ اٹھایا اور مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے بھروسہ دیاہے کہ اس معاملے پر بحث کی جائے گی۔سنگھ نے بتایا کہ شرومنی اکالی دل اور بی جے پی کے دیگر ساتھیوں نے بھی اس معاملے پر جے ڈی یو کی حمایت کی۔اس سے پہلے منگل کو نتیش کمار نے پٹنہ میں ایک پریس کانفرنس میںکہاہے کہ نئے سوالات کو شامل کرنے کے بعد الجھن بنی ہے، خاص طور پر والدین کی پیدائش اور عمر اور اس کی معلومات کی ضرورت نہیں ہے۔نتیش کمار نے کہا کہ غریب لوگوں کو معلوم نہیں ہوتا کہ ان کے والدین کہاں پیدا ہوئے لہٰذاجو پرانے سوالوں کی لسٹ ہے اسی پر عمل کیا جانا چاہیے۔ نتیش نے کہا تھا کہ لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں ان کی پارٹی کے پارلیمانی پارٹی کے لیڈر اس بارے میں اپنی بات رکھیں گے۔لیکن سروے کنندگان کوڈی یعنی مشکوک لکھنے کااختیاردینے والے سنگین کالم پروہ خاموش ہیں جس کے بعداین آرسی میں کوئی دشواری نہیں ہوگئی۔ اس سے نتیش کمارکی نیت پرسوال اٹھ رہے ہیں۔نئے شہری قانون کے بارے میں انہوں نے کہا کہ لوگوں کو سپریم کورٹ کے فیصلے کا انتظار کرناچاہیے۔انہوں نے کہاہے کہ مرکزی حکومت کو ماحول کو عام کرناچاہیے۔ انہوں نے کہا کہ جنہیں اعتراض ہے انہیں اس معاملے میں سپریم کورٹ کے سامنے بحث کرنی چاہیے۔ لیکن مختلف ریاستوں کی طرف سے اس کے خلاف جو قراردادمنظورکی جا رہی ہیں، ہر ریاست کا اپنا اپنا حق اور رائے ہوتی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close