اہم خبریں

وزیر اعظم کا بنگال دورہ : ’گو بیک مودی‘ کے پوسٹروں کے ساتھ احتجاج!

پی ایم نریندر مودی مغربی بنگال کے دو روزہ دورے پر ہیں جہاں انہیں عوامی مخالفت کا سامنا ہے، ایک طرف جہاں ٹوئٹر پر ’گو بیک مودی‘ ٹرینڈ چل رہا ہے وہیں سڑکوں پر اتر کر لوگ ان کے دورے کی مخالفت کر رہے ہیں۔

کولکاتا ۔ 11 جنوری 2019 : وزیر اعظم نریندر مودی ہفتے کے روز مغربی بنگال کے دو روزہ دورے پر پہنچے ہیں۔ دریں اثنا ان کو عوامی مخالفت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ مودی کے دورے سے قبل ہی ایک طرف جہاں ٹوئٹر پر ’گو بیک مودی فرام بنگال‘ (مودی بنگال سے واپس جاؤ) ہیش ٹیگ گردش کرنے لگا وہیں طلباء و دیگر افراد نے سڑکوں پر اتر کر ان کے دورے کی مخالفت کی۔
سوشل میڈیا پر لوگوں ’گو بیک مودی فرام بنگال‘ کا ہیش ٹیگ چلایا جا رہا ہے اور لوگوں سے احتجاج کرنے ایئرپورٹ اور وی آئی پی روڈ پہنچنے کو کہا گیا ہے۔
West Bengal: Students’ Federation of India protests against PM Narendra Modi’s visit to Kolkata. PM Modi will be on a two-day official visit to Kolkata from today, where he will take part in various programmes including 150th anniversary celebrations of Kolkata Port Trust. #CAA pic.twitter.com/F0crHgW6hc
— ANI (@ANI) January 11, 2020
طلبا تنظیم اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف انڈیا (ایس ایف آئی) بھی وزیر اعظم مودی کے کولکاتا دورے کی مخالفت کر رہی ہے۔ واضح رہے کہ وزیر اعظم مودی ’کولکاتا پورٹ ٹرسٹ‘ کی 150 ویں سالگرہ کے جشن اور اس کی مناسبت سے ہونے والی تقریبات میں حصہ لینے کے لئے کولکاتا پہنچے ہیں۔ وزیر اعظم مودی کے دورے سے پہلے ہی دو تنظیموں نے نیتا جی سبھاش چندر بوس بین الاقوامی ہوائی اڈے اور سڑکوں پر احتجاج کا منصوبہ بنایا ہے۔
دریں اثنا، انتظامی افسران نے وزیر اعظم کے دورے کے لئے مکمل سیکورٹی کی ضمانت دیتے ہوئے کہا کہ ہوائی اڈے سے شہر تک کا پورا راستہ خالی کرا لیا گیا ہے اور احتجاج کے کسی بھی امکان کو ختم کرنے کے لئے سڑکوں پر رکاوٹیں لگا دی گئی ہیں۔
وزیر اعظم نے اس دورے سے قبل ٹوئٹ کیا، ’’میں آج اور کل مغربی بنگال میں رہنے کے لئے پُر جوش ہوں۔ مجھے خوشی ہے کہ میں رام کرشن مشن میں وقت گزاروں گا اور وہ بھی اس درمیان جب ہم سوامی ویویکانند کی جینتی منا رہے ہیں۔ یہاں ایسا کچھ ہے جو بہت خاص ہے۔ پھر بھی ایک کمی ہے کہ سوامی آتماستھانند جی وہاں موجود نہیں ہیں جنہوں نے مجھے ’جن سیوا ہی پربھو سیوا‘ کا درس دیا تھا۔‘‘

Yet, there will be a void too! The person who taught me the noble principle of �Jan Seva Hi Prabhu Seva�, the venerable Swami Atmasthananda Ji will not be there. It is unimaginable to be at the Ramakrishna Mission and not have his august presence!
— Narendra Modi (@narendramodi) January 11, 2020
واضح رہے کہ وزیر اعظم مودی کولکاتا پورٹ ٹرسٹ کی 150 ویں سالگرہ کی تقریبات اور مختلف پروگراموں میں حصہ لیں گے۔ اس کے علاوہ ان چار تاریخی عمارتوں، جن کی تزئین و آرائش کی گئی ہے، انہیں بھی وہ قوم کے لئے وقف کریں گے۔
اس دوران وہ رابندر پُل (ہاوڑہ برج) پر لائٹ اینڈ ساؤنڈ شو کا افتتاح بھی کریں گے۔ اس کے علاوہ وہ رام کرشن خانقاہ اور رام کرشن مشن کے عالمی صدر مقام بیلور خانقاہ جائیں گے۔ واضح رہے کہ 2019 کے لوک سبھا انتخابات کے بعد وہ پہلی بار مغربی بنگال جا رہے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close