اہم خبریں

سماج وادی پارٹی عہدیداران نے حیدرآبا دکی لڑکی کے ساتھ ہوئی اجتماعی عصمت دری کے خلاف کیا مظاہرہ

دیوبند، 5؍ دسمبر (رضوان سلمانی) حیدرآباد کی رہنے والی ڈاکٹر کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کرکے اس کا بے رحمی سے قتل کئے جانے کی مخالفت میں آج سماج وادی پارٹی کارکنان نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے صدر جمہوریہ کو میمورنڈم ارسال کیا۔ سماج وادی پارٹی لیڈران نے قاتلوں کو سخت سے سخت سزا دلائے جانے کا مطالبہ بھی کیا۔ تفصیل کے مطابق گنا سمیتی کے سابق چیئرمین چودھری پروندر سنگھ کی قیادت میں سماج وادی پارٹی کارکنان نے ایس ڈی ایم راکیش کمار کو ایک میمورنڈم سونپا ، میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ حیدرآباد کی رہنے والی ڈاکٹر کے ساتھ ہوئی درندگی کی واردات سے ملک میں رہنے والے لوگوں کے ماتھے پر پریشانیوں کی لکیریں گہری ہوگئی ہیں ، جنہو ںنے اپنی لڑکیوں کو اکیلے شہروں میں تعلیم حاصل کرنے یا ملازمت کرانے کے لئے بھیجا ہوا ہے انہوں نے صدر جمہوریہ کو بتایا کہ مذکورہ واقعہ سے لوگ اس خوفناک قتل کو دہلی میں نربھیا کانڈ کے برابر دیکھ رہے ہیں ۔ میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ بہو بیٹیوں کے درمیان سیکورٹی کو لے کر ملک میں افراتفری کا ماحول ہے ۔ کارکنان نے کہا کہ قانون میں سبھی شہریوں کو سیکورٹی دیئے جانے کی گارنٹی دی گئی ہے ۔ اس لئے قانون کو بچائے رکھنے کے لئے پہلے سے بنے قانون میں تبدیلی لاکر اور زیادہ سخت قانون بنایا جانا وقت کی ضرورت ہے۔ میمورنڈم میں صدر جمہوریہ ہند سے اس واقعہ کو انجام دینے والے ملزمان کو پھانسی کی سزا دلائے جانے کا مطالبہ کیا گیا ہے جس سے بہو بیٹیوں کو سماج میں پھیلی برائیوں سے بچاتے ہوئے بے خوف سماج میں زندگی گزارنے کا حوصلہ مل سکے۔ اس دوران سماج وادی پارٹی کے دیوبند اسمبلی صدر رمیش پنوار کرشن پال پردھان ، نریندر کمار، دانش گوڑ، چودھری شمشاد، منور، امیر عالم، رائو قاری ساجد، پنکج چودھری، عمران، روہت شرما، محمد لقمان، بھیم تیاگی، پرویز عالم، سرتاج تیاگی اور مستقیم ٹھیکیدار وغیرہ موجود رہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close