اہم خبریں

دہلی فساد: اسپیشل سیل کا اسٹیٹس رپورٹ میں دعویٰ : ملزم خالد سیفی نے فساد سے قبل ملائیشیاجاکر کی ڈاکٹر ذاکرنائک سے ملاقات،ملی غیرملکی فنڈنگ

نئی دہلی، 4 جولائی(آئی این ایس انڈیا) فروری میں دارالحکومت میں ہونے والے فسادات کی تحقیقات کرنے والے خصوصی سیل نے اس واقعے میں غیر ملکی مالی مدد کے سراغ ملنے کادعویٰ کیاہے۔ خصوصی سیل نے یہ بڑا دعویٰ عدالت میں دائر اسٹیٹس رپورٹ میں کیا ہے۔ اسپیشل سیل کی رپورٹ میں یہ بھی دعوی کیا گیا ہے کہ فسادات کے ایک ملزم خالد سیفی نے مشہور اسلامی مذہبی مبلغ ڈاکٹر ذاکر نائک سے بھی ملاقات کی تھی۔

[ads1]

خالد سیفی کو فساد کے الزام میں اسپیشل سیل نے گرفتار کیا تھا اور اس کا پاسپورٹ بھی قبضے میں لے لیا تھا۔ تفتیش میں پاسپورٹ کی تفصیلات سے انکشاف ہوا ہے کہ خالد سیفی نے فسادات سے قبل ڈاکٹر ذاکر نائک سے ملاقات کی تھی۔اس کیلئے سیفی ملائیشیا گیا تھا۔یہ وہی خالد سیفی ہے جس نے شاہین باغ میں طاہر حسین اور عمر خالد سے ملاقات کی تھی اورمبینہ طورپر فسادات کا منصوبہ بنایا۔

[ads3]

رپورٹ کے مطابق ملزم خالد سیفی کو سنگاپور کے این آر آئی نے فسادات کے لئے رقم بھیجی تھی، جو خالد کے این جی او میں ٹرانسفرہوا تھا۔ خالد سیفی میرٹھ سے اپنے رشتہ دار کے ساتھ ایک این جی او چلاتے ہیں۔ اس رشتے دار سے بھی سیل کوابھی پوچھ گچھ کرنی ہے۔

[ads4]

اسپیشل سیل کی اسٹیٹس رپورٹ کے مطابق سی اے اے کے خلاف اشتعال انگیز تقریرکرنے والی اور فسادات کے الزام میں گرفتار عشرت جہاں کو بھی فنڈز بھیجا گیاتھا، اسے یہ رقم غازی آباد اور مہاراشٹرا میں مقیم اس کے رشتہ داروں سے ملی تھی۔دہلی فسادات سے متعلق حال ہی میں ایک چارج شیٹ بھی دائر کی گئی تھی۔ وہیں فسادات کے ملزم عام آدمی پارٹی کے معطل کونسلر طاہر حسین کے خلاف بھی کاروائی جارہی ہے، جس کے تحت ای ڈی نے حال ہی میں اس کے 6 مقامات پر چھاپی ماری کی تھی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close