اہم خبریں

ہند-چین تنازع پر بولی کانگریس، حکومت بتائے سرحد پر کیا ہو رہا ہے؟

نئی دہلی،27مئی(آئی این ایس انڈیا) گزشتہ کافی دنوں سے ہند-چین کے درمیان تنائو دیکھا جا رہا ہے۔چین اپنی حرکتوں سے باز نہیں آ رہا ہے۔چین نے مشرقی لداخ کی پینگونگ تساو جھیل میں اپنی گشتی کشتیوں کی تعیناتی بڑھا دی ہے،ان تمام واقعات کو لے کر کانگریس نے مرکزی حکومت کو خط بھیجا ہے۔خط میں لکھا ہے کہ لداخ میں کافی دنوں سے جو کچھ بھی چل رہا ہے حکومت کو عوام کے سامنے سارے حالات واضح کرنا چاہئے۔

کانگریس نے کہا ہے کہ چین نے مشرقی لداخ کی پینگونگ تساو جھیل اور گلوان پہاڑیوں کے علاقے میں چین کی فوج بڑھائی گئی ہے اور ہندوستانی فوج اور چینی فوج کے درمیان کچھ جھڑپوں کی بھی بات سامنے آئی ہے۔یہ ایک قوم کے لئے سنگین موضوع ہے۔اندرون و بیرون ملک کی تمام میڈیا کے حوالے سے جو خبریں آرہی ہیں،اس نے اس ملک کے باشندوں کو فکر میں ڈال دیا ہے۔کانگریس حکومت مرکزی حکومت سے اپیل کرتی ہے کہ ملک کو اعتماد میں لیتے ہوئے سارے حالات سے آگاہ کروائیں ۔اس سے پہلے کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے بھی اس مسئلے پر سوال اٹھائے تھے۔

کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے کہا کہ سرحد پر جو ہوا ہے، اس کی تفصیلات حکومت کو ملک کے سامنے رکھنا چاہئے،ابھی کسی کو نہیں معلوم ہے کہ کیا ہوا ہے، نیپال کے ساتھ کیا ہوا اور لداخ میں کیا ہو رہا ہے،حکومت کو ملک کے سامنے رکھنا چاہئے۔اس کے علاوہ چین کے ساتھ ہوئے تنازع پر راہل گاندھی بولے کہ ہند-چین کا مسئلہ ابھی چل رہا ہے،اس پر میں زیادہ نہیں بولنا چاہتا، اس کو میں حکومت کی سمجھداری پر چھوڑتا ہوں مگر شفافیت کی ضرور ضرورت ہے، کیونکہ شفافیت کے بغیر میرا اس پر بولنا صحیح نہیں ہوگا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close