اہم خبریں

ہماچل پردیش: پی پی ای کٹ گھوٹالے میں بی جے پی ریاستی صدر کا استعفیٰ، صحت ڈائریکٹر پہلے ہی گرفتار

شملہ،27مئی(آئی این ایس انڈیا) ہماچل پردیش میں ہوئے پی پی ای کٹ خریداری گھوٹالے کی آنچ بی جے پی تک پہنچ گئی ہے۔بی جے پی ریاستی صدر راجیو بندل نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔بدھ کو بندل نے اپنا استعفیٰ قومی صدر جے پی نڈا کو بھیج دیا ہے۔گھوٹالے سے منسلک افسر کی بات چیت کا مبینہ آڈیو کلپ سامنے آنے کے بعد صحت ڈائریکٹر اجے گپتا کو پہلے ہی گرفتار کیا جا چکا ہے، جس وائرل آڈیو کلپ کی بنیاد پر صحت ڈائریکٹر کی گرفتاری ہوئی ہے، اس میں کروڑوں روپے کے لین دین کی بات کہی جا رہی ہے۔

راجیو بندل نے بی جے پی قومی صدر جے پی نڈڈا کو بھیجے اپنے استعفیٰ میں لکھاکہ گزشتہ دنوں صحت ڈائریکٹر کی مبینہ آڈیو کلپ وائرل ہوئی جس کے تناظرمیں ریاستی حکومت نے ان کے خلاف کیس درج کرکے انہیں گرفتار کر لیا۔ویجلینس محکمہ اس معاملے کی تحقیقات کر رہا ہے، مگر اسی درمیان کچھ لوگ بی جے پی کی طرف بھی انگلیاں اٹھا رہے ہیں،میں بی جے پی کا ریاستی صدر ہوں اور چاہتا ہوں کہ اس کی مکمل اور منصفانہ تحقیقات ہو،لہذا اعلی اخلاقی اقدار کی بنیاد پر میں استعفیٰ دے رہا ہوں۔

بندل نے خط میں کہاکہ اس کیس کا بی جے پی ہماچل پردیش سے کوئی لینا دینا نہیں ہے،اسے بی جے پی سے جوڑنا سراسر ناانصافی ہے اور کورونا وبا کے دوران بی جے پی کی طرف سے کی جارہی سماجی خدمات کی بھی توہین ہے۔یاد رہے میں صرف اعلی اخلاقی اقدار کی بنیاد پر استعفیٰ دے رہا ہوں۔ ہماچل پردیش میں پی پی ای خریداری گھوٹالے کا یہ معاملہ وزیر اعظم کے دفتر تک پہنچ گیا تھا۔

ایک خط کے ذریعے وزیر اعظم کو ریاست میں کورونا دور میں ہوئے گھوٹالے کی مکمل معلومات دی گئی تھی۔خط میں لکھا گیا کہ کورونا وائرس عام لوگوں کے لئے آفت ہے، لیکن کچھ لوگوں کے لئے بدعنوانی کی فصل کاٹنے کا وقت ہے۔وزیر اعلی کورونا وائرس کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں، لیکن کچھ لوگ حکومت کو بدنام کرنے کا کام کر رہے ہیں۔ریاست میں ہوئے اس معاملے کی شکایت آخر کس نے پی ایم او تک پہنچائی، یہ بحث کا موضوع ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close