اہم خبریں

کسانوں نے یکم فروری کوپارلیمنٹ مارچ کااعلان کیا ، دہلی سرحدپر20ہزارسے زائدٹریکٹرزموجود،امت شاہ کے گھراعلیٰ سطحی میٹنگ

نئی دہلی25جنوری(آئی این ایس انڈیا)
26 جنوری کو کسان تنظیمیں دہلی سرحد پر وسیع ٹریکٹر ریلی کریں گی۔ ادھر کسانوں نے ایک اور اعلان کیا ہے۔ کسان تنظیموں کاکہنا ہے کہ وہ یکم فروری کو پارلیمنٹ ہاؤس تک پیدل مارچ کریں گے۔ اس دن بجٹ ایوان میں پیش کیا جانا ہے۔کسانوں کاکہناہے کہ ہماری لڑائی مودی حکومت سے ہے۔دوسری جانب ٹریکٹر ریلی کے حوالے سے وزیر داخلہ امیت شاہ کے گھرپراعلیٰ سطحی میٹنگ ہوئی ہے۔پولیس کی منظوری کے بعد ٹریکٹر پریڈ کی پوری تیاریاں ہیں۔ پولیس نے مظاہرے میں صرف 5 ہزار ٹریکٹر اور 5 ہزار افراد کو شرکت کی اجازت دی ہے۔ تاہم سنگھو بارڈر پر ہی 20 ہزار سے زیادہ ٹریکٹرموجودہیں۔پریڈ کے راستے پرپولیس اورکسانوں کے مختلف دعوے ہیں۔ دہلی پولیس کمشنر ایس این سریواستو نے پیرکے روزکہاہے کہ کسان رہنماؤں سے بات چیت کے بعد ٹریکٹر ریلی کے 3 راستوں پر اتفاق کیا گیا ہے۔ ہم نے روٹس کابھی دورہ کیاہے۔ ہم کچھ ملک دشمن عناصر کے بارے میں محتاط ہیں جو رکاوٹ پیدا کرسکتے ہیں۔اس سے قبل کسان مزدورسنگھرش سمیتی کے رہنماایس ایس پنڈھرنے کہاہے کہ پولیس نے ہم نے جو راستہ طے کیا تھا وہ نہیں دیا، کل رات جب ہمیں اس کا علم ہوا تو ہماری کمیٹی نے اس پر تبادلہ خیال کیا۔ ہم آج شام تک اپنا راستہ بتا دیں گے۔ ہم نے دہلی پولیس کے عہدیداروں سے ایک بار پھر اپیل کی ، لیکن کوئی درمیانی زمین نہیں ملی۔ ہم نے ان سے اپنے سینئرزسے بات کرنے کو کہا ہے۔اگر وہ ہمارے راستے پر راضی ہوجائیں تو اچھا ہوگا۔ ہم پریڈ اسی راستے پر کریں گے جس کاہم نے فیصلہ کیاہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close