یوپی

اہانت ِ رسول ؐ کیخلاف مظاہرہ میں مبینہ تشدد: مبینہ ماسٹر مائنڈ جاوید پمپ کو پولیس نےلیاحراست میں

الٰہ آباد ،11جون (ہندوستان اردو ٹائمز) یوپی کے الٰہ آباد اب ( پریاگ راج) میں جمعہ کی نماز کے بعد مبینہ شرپسندوں کے تشدد کے ماسٹر مائنڈ محمد جاوید عرف جاوید پمپ کو پولیس نے ہفتہ کو حراست میں لے لیا۔ سٹی سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس اجے کمار نے یہ معلومات دیتے ہوئے بتایا کہ شہر کے خلد آباد تھانہ علاقہ کے اٹالہ(کثیر مسلم آبادی علاقہ ) میں کل جمعہ کی نماز کے بعد ہنگامہ کے 24 گھنٹے کے اندر پولیس نے جاوید کو واقعہ کے ماسٹر مائنڈ کے طورپر شناخت کرکے حراست میں لے لیاہے،اس سے پوچھ گچھ جاری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ کل کے تشددکے بعد پولیس کی تفتیش میں واردات کے ماسٹرمائنڈ کے طورپر جاوید کا نام سامنے آیا تھا۔

کمار نے کہا کہ شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) کے خلاف ماضی کی تحریکوں میں بھی جاوید کے ذریعہ اہم کرداراداکرنے کی بات پولیس کی تفتیش میں سامنے آئی ہے۔انہوں نے کہا کہ جاوید کا موبائیل فون قبضے میں لے کر جانچ کی جارہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ابتدائی پوچھ گچھ میں پتہ چلا ہے کہ دہلی واقع جواہرلال نہرویونیورسٹی میں زیرتعلیم جاوید کی بیٹی اسے مشورہ دیتی ہے۔

کمار نے واضح کیا کہ کسی کو مشورہ دیناکوئی جرم نہیں ہے لیکن اگر قانونی عمل کے بعد ضرورت پیش آئی تو جاوید کی ان سرگرمیوں سے جڑے دیگر لوگوں سے بھی پوچھ گچھ کی جا سکتی ہے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button