قومی

آسام کے وزیر اعلیٰ کی اہلیہ نے دہلی کے ڈپٹی سی ایم سیسودیا پردرج کرایامقدمہ

نئی دہلی، 22جون (ہندوستان اردو ٹائمز) دہلی کی عام آدمی پارٹی کی حکومت کی مشکلات ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہیں، اب ڈپٹی سی ایم منیش سیسودیا کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

آسام کے وزیر اعلیٰ ڈاکٹر ہیمنت بسوا شرما کی اہلیہ رنکی بھویاں سرما نے منگل کو نائب وزیر اعلیٰ منیش سیسودیا کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا ہے۔سول جج، گوہاٹی کی عدالت میں رنکی بھویاں شرما نے ہتک عزت کا دیوانی مقدمہ دائر کیا ہے اور 100 کروڑ روپے ہرجانے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔بتادیں کہ آسام کے وزیر اعلیٰ ہمانتا بسوا سرما کی اہلیہ رنکی بھویان نے منگل کو پی پی ای کٹ معاملے پر دہلی کے نائب وزیر اعلی اور اے اے پی لیڈر منیش سیسودیا کے خلاف 100 کروڑ روپے کا ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا ہے۔

اس معاملے کی سماعت 22 جون کو گوہاٹی ہائی کورٹ میں ہو سکتی ہے۔ رنکی بھویاں کے وکیل پی نائک نے کہا کہ رنکی بھویان سرما نے ایف آئی آر درج کرائی ہے۔حال ہی میں دہلی کے نائب وزیر اعلیٰ منیش سیسودیا نے آسام کے وزیر اعلیٰ ہمانتا بسوا سرما کے خلاف پی پی ای کٹس کے ٹھیکے کو لے کر بدعنوانی کے الزامات لگائے۔

سیسودیا نے ایک پریس کانفرنس کے دوران الزام لگایا کہ ہیمنت بسوا سرما نے اپنی بیوی اور بیٹے کے کاروباری شراکت داروں کی فرموں کو 2020 میں مارکیٹ ریٹ سے زیادہ پر پی پی ای کٹس کی فراہمی کے لیے سرکاری ٹھیکے دیئے تھے۔سیسودیا کے اس بیان پر ہیمنت بسوا نے کہا تھا کہ وہ قانونی کاروائی کریں گے، کیونکہ ان کی اہلیہ نے ایک پیسہ لیے بغیر حکومت کو 1500 پی پی ای کٹس عطیہ کی تھیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button