یوپی

اَگنی پتھ اسکیم‘ نے ملک کے نوجوانوں کو مایوس اور دلبرداشتہ کیا ہے: مایاوتی

لکھنؤ، 19جون (ہندوستان اردو ٹائمز) بہوجن سماج پارٹی سپریمومایاتی نے اتوار کو کہا کہ مہنگائی اور بے روزگار کی وجہ سے تناؤ میں زندگی گزارنے کو مجبور نوجوان طبقے کو مرکزی حکومت کی اگنی پتھ اسکیم نے مایوس اور دلبرداشتہ کیا ہے۔مایاوتی نے اس ضمن میں ایک بعد دیگر کئی ٹوئٹ میں لکھا کہ ایسے وقت میں جب مٹھی بھر لوگوں کو چھوڑ کر ملک کی بڑی آبادی میں سے خاص کر نوجوان طبقہ، غریبی، مہنگائی، بے روزگاری، تناؤ وغیرہ کے راستے پر ہر دن بغیر تھکے ہارے جدوجہد کو مجبور ہے۔ انہیں مرکزی حکومت کی قلیل مدتی اگنی پتھ آرمی تقرری اسکیم نے کافی مایوس اور دلبرداشتہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مرکز کے ذریعہ ریلوے، آرمی اور نیم فوجی دستے وغیرہ میں تقرریوں کی تعداد و امکانات کو کافی محدود کرنے کا یہ نتیجہ ہے کہ خاص کر دیہی علاقوں کے محنتی نوجوان کافی بے سہارا اور اپنے کو ٹھگا ہوا محسوس کر رہے ہیں اور مستقبل کو تاریک میں پاکر ان کا اشتعال اُبال پر ہے۔ جسے صحیح سے سنبھالنا ضروری ہے۔بی ایس پی سپریمو نے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ مرکز سے دوبارہ اپیل ہے کہ ملک کے مستقبل ان متاثرہ نوجوانوں کے درد و ان کے مستقبل کے مسئلے کو سنجیدگی سے لے کر اپنے فیصلے پر دوبارہ غور کرے اور ملک کی سیکورٹی سے متعلق ایسے اہم معاملوں میں پارلیمنٹ کو اعتماد میں ضرور لے۔ نوجوانوں سے اپیل ہے کہ وہ صبر کا دامن نہ چھوڑیں۔

قابل ذکر ہے کہ مرکزی حکومت کی آرمی تقرری کی نئی اسکیم اگنی پتھ کے سلسلے میں ملک کے مختلف حصوں میں پرتشدد واقعات پیش آئے ہیں۔ مرکزی حکومت نے اگنی ویروں کو تیقن دیا ہے کہ انہیں چار سال کی نوکری کے بعد مختلف سرکاری نوکریوں میں دس فیصدی ریزرویشن دیا جائے گا۔ اس کے علاوہ ان کے بہتر مستقبل کے خاطر یہ فوجی تقرری اسکیم میں ہے جن کا انہیں فائدہ اٹھانا چاہئے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button