دہلی

انسداد تجاوزات مہم کے تحت بلڈوزر آئی ٹی او قبرستان کے قریب پہنچ گیا

نئی دہلی، 22جون (ہندوستان اردو ٹائمز) میونسپل کارپوریشن آف دہلی (ایم سی ڈی) کے اہلکار بدھ کو بلڈوزر اور پولیس فورس کے ساتھ انسداد تجاوزات مہم کے ایک حصے کے طور پر آئی ٹی او قبرستان کے قریب غیر قانونی ڈھانچوں کو ہٹانے کے لیے پہنچے۔ ایک اہلکار نے ا سکی جانکاری دی۔انہوں نے کہا کہ مہم کے تحت 50 کے قریب غیر قانونی تعمیرات کو ہٹایا جائے گا۔ مہم جمعرات تک جاری رہ سکتی ہے۔کارپوریشن حکام کے مطابق، تجاوزات کرنے والوں کو کارروائی کرنے سے پہلے ڈھانچے کی ملکیت ثابت کرنے والے دستاویزات پیش کرنے کا ضروری موقع دیا گیا تھا۔

ایم سی ڈی کے ایک اہلکار نے بتایا کہ انسداد تجاوزات آپریشن شروع ہو گیا ہے۔ یہ تجاوزات ہٹانے کے لیے دو روزہ کارروائی ہے، اس لیے جمعرات کو بھی جاری رہے گی۔ کارروائی کے دوران عارضی اور مستقل غیر قانونی تعمیرات، جھونپڑیوں کو مسمار کر دیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ یہ مہم ٹائمز آف انڈیا کی عمارت اور آئی ٹی او قبرستان کی پچھلی گلیوں میں چلائی جا رہی ہے۔

شہری ادارہ نے کہا کہ اس نے دہلی پولیس کو خط لکھ کر مہم کے لیے پیشگی پولیس کی تعیناتی کا مطالبہ کیا ہے۔ایم سی ڈی کے ایگزیکٹو انجینئر (سنٹرل زون) کی طرف سے دہلی پولیس کو بھیجے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ شہری ادارے نے ہائی کورٹ کی ہدایات کی تعمیل کرتے ہوئے ٹائمز آف انڈیا کی عمارت کے پیچھے سڑک سے تجاوزات کو ہٹانے کے لیے کارروائی کا منصوبہ بنایا ہے۔انہوں نے خط میں کہاکہ تجاوزات کرنے والوں کو اپنی ملکیت ثابت کرنے کے لیے ضروری دستاویزات پیش کرنے کا موقع دیا گیا ہے، لیکن ان میں سے کوئی بھی ملکیتی دستاویزات جمع نہیں کرا سکا۔

اسی مناسبت سے تجاوزات ہٹانے کا پروگرام 22 اور 23 جون 2022 کو مقرر کیا گیا ہے۔ غور طلب ہے کہ مئی کے مہینے میں کارپوریشن کے عہدیداروں نے جہانگیر پوری، شاہین باغ، مدن پور کھادر، لودھی کالونی، تلک نگر میں اس طرح کی مہم چلائی تھی۔انسداد تجاوزات مہم کے دوران انہیں جہانگیر پوری سمیت بعض علاقوں میں مقامی لوگوں کی سخت مخالفت اور مزاحمت کا سامنا کرنا پڑاتھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button