دیوبند

امرت مہوتسو کے تحت اسلامیہ انٹر کالج میں تقسیم ہند کے عنوان پر تحریری مقابلہ کا انعقاد

دیوبند، 14؍ اگست (رضوان سلمانی) آزادی امرت مہوتسو کے تحت وزیر اعظم نریندر مودی کی اپیل پر 14 اگست کو ملک بھر میں یوم تقسیم ہند (وبھاجن وبھیشیکا امرت دیوس) کے طور پر منایاگیا۔ اس سلسلے میں اتوار کو شہر کے معروف تعلیمی ادارے اسلامیہ انٹر کالج دیوبند میں آزادی کے امرت مہوتسو کے تحت یوم تقسیم ہندکے تناظر میں ایک تحریری مقابلہ کاانعقاد کیاگیا۔

جس کا افتتاح ایس ڈی ایم دیپک کمار نے فیتہ کاٹ کر کیا۔اس موقع پر طلبہ وطالبات نے تقسیم ہند کے عنوان پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے تقسیم ہند سے ہوئے نقصانات کااحاطہ کیا اور اسے برصغیر کا سب سے بڑا سانحہ اور انسانی المیہ قرار دیا۔اس موقع پر ایس ڈی ایم دیپک کمار نے کہا کہ 1947 میں آج ہی کے دن تقسیم کے سبب ہوئے تشدد اور ذہنی نفرت کی وجہ سے لاکھوں لوگ بے گھر ہوئے گئے تھے اور بہت سے لوگ اپنی جانیں گنوائی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وبھاجن وبھیشیکا امرت دیوس ، کے تحت سماجی تقسیم سے پیدا ہوئی آپسی دشمنی کے زہر کو دور کرنے اور اتحاد، سماجی ہم آہنگی اور انسانیت کو بااختیار بنانے کے جذبے کو مزید مضبوط کرنے کی ضرورت ہے۔اس موقع پر اسکول انتظامیہ اور ایس ڈی ایم نے مقابلہ میں حصہ لینے والے طلبہ وطالبات کی حوصلہ افزائی کی اور ان کے مضامین کی ستائش کی۔اس موقع پر تحصیلدار تپن کمار، کالج منیجر رضوان الحق، پرنسپل ارشد زماں، سینئر سماجی کارکن سیٹھ کلدیپ سمیت کالج کا جملہ عملہ موجودرہا۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button