بہار و سیمانچل

اللہ! آٹھویں امیر شریعت سے یقینا ملک و ملت کے لیے بڑا کام لے گا : ماسٹر نثار احمد جموئی

مرکزی امارت شرعیہ میں امیر شریعت سے ملاقات پر سمع وطاعت کا اقرار، ساتھ ہی مبارک باد اور نیک خواہشات کا اظہار

جموئی 10؍ اکتوبر 2021(پریس ریلیز) امیر شریعت سابع مولانا محمد ولی رحمانی صاحب علیہ الرحمہ کے انتقال کے بعد امیر شریعت کا عہدہ خالی تھا، کل گذشتہ الحمد للہ نصرتِ الٰہی سے اللہ نے امارت شرعیہ کو اپنے فضل و کرم سے مولانا احمد ولی فیصل رحمانی مدظلہ العالی کی شکل میں ایک نیا امیر عطا فرمایا۔ ہمیں یقین ہے کہ وہ امراء سابقین کے طریقے پر چلتے ہوئے یقینا امارت شرعیہ کو نئی بلندیوں پر لے جائیں گے۔ اِن خیالات کا اظہار امارت شرعیہ کے رُکن ارباب حل و عقد ماسٹر نثار احمد نے کیا۔
اُنھوں نے مزید کہا کہ مجھے یقین ہے کہ امیر شریعت ثامن کا تعلق جس خانوادہ سے ہے اُس کی تاریخ رہی ہے کہ اُس نے مسلمانوں کو ہمیشہ آگے بڑھ کر کچھ دینے کا کام کیا ہے، والد محترم ہوں یا دادا جان، ہر دو کو اللہ نے امارتِ شرعیہ کا امیر بنایا اور دونوں نے امارت کو جس بلندی پر پہنچایا تاریخ اُس کی گواہ ہے؛ لیکن ابھی امارت کو اور کام کرنا ہے اور شاید اللہ نے اِسی کام کے لیے مولانا احمد ولی فیصل رحمانی کا انتخاب فرمایا ہے۔
ابھی ملت ہر طرح سے پچھڑی ہوئی ہے، تعلیمی میدان ہو یا اقتصادی میدان،بمشکل تمام مسلمانوں کی تعداد تلاش کرنے سے نظر آتی ہے؛ لہٰذا ایسے نازک وقت میں دینی اور دنیوی تعلیم کے حسین سنگم امیر شریعت ثامن مدظلہ العالی سے ہم یہ امید کرتے ہیں کہ وہ دینی میدان میں بھی اور دنیاوی میدان میں بھی مسلمانوں کی بھر پور نمائندگی کریں گے۔
میں اپنی جانب سے اور تمام ارباب حل وعقد باشندگان جموئی کی جانب سے حضرت امیر شریعت ثامن کی سمع وطاعت کا اعلان کرتے ہوں اور یہ وعدہ کرتے ہوں کہ ان شاء اللہ ہم باشندگانِ جموئی، تنگی اور آسانی ہر حال میں امارت کے ساتھ جڑ کر ملت کے فائدے اور سربلندی کے لیے مستقل کوشاں رہیں گے۔ اللہ سے دعا ہے کہ اللہ تبارک وتعالیٰ حضرت امیر شریعت ثامن کے انتخاب کو ملت کے لیے نافع بنائے۔ آمین

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close