اشعار و غزل

غزل : کہاں سےڈھونڈکرلاؤں میں سبزہ زار کوئی : بچھا رہا ہےگلستاں میں آج خار کوئی : از قلم:- رضیہ سلطانہ

غزل

از قلم:- رضیہ سلطانہ۔۔مٹیا بُرج کولکتہ۔۔۔۔

 

کہاں سے ڈھونڈ کر لاؤں میں سبزہ زار کوئی

بچھا رہا ہے گلستاں میں آج خار کوئی

خاموش چاند،ستاروں سے بھری راتوں میں کوئی

میرے وجود کا ہے اِنتظار کوئی

چلی ہے گرم ہوا اپنی آرزو ہے یہی

کہ میری زیست بھی بن جائے لالہ زار کوئی

بہت دنوں پر مجھے آج یہ خیال آیا

کہ کرتا رہتا ہے اِس دل کو بے قرار کوئی

اُداس شام کی تنہائیوں میں ہر لمحہ

دل و نگاہ کوکرتا ہے اشک بار کوئی

راہِ وفا میں نیا ہمسفر ملا ہے اُسے

تو کس طرح سے کرے اُس پر اعتبار کوئی

کسی کو میری وفاؤں پر اعتبار نہیں

تو مجھ سے کیسے کرے زندگی میں پیار کوئی

ہمارے درمیاں جب فاصلے ہے اے رضیہ

دلوں کا رشتہِ کرے کیسے استوار کوئی۔۔۔۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close