اشعار و غزل

نظم : ہجرت : اپنی مٹی، اپنے گھر سے دور: پھنس گئے ہیں لاکھوں مزدور!عرشیہ انجم

نظم

ہجرت

عرشیہ انجم

اپنی مٹی، اپنے گھر سے دور
پھنس گئے ہیں لاکھوں مزدور

لیکن یہ محنت کش طبقہ
بیٹھے بیٹھے مر نہیں سکتا

اپنے گاؤں سے ہجرت کرنے والے
اپنی محنت کی روٹی کھانے والے

امید چھوڑ نہیں سکتے
حوصلہ توڑ نہیں سکتے

زندہ رہنے کے لیے
پہلے بھی ہجرت کی تھی

اک ہجرت اور سہی
اپنے گھر کی دہلیز پر مرنے کے لیے

اپنے سوکھے جسم کو لیکر
بھوک و پیاس کو مات دے کر

چھوڑ دیا ہے ان شہروں کو
جہاں سب کچھ سراب جیسا ہے

arahiyaanjum1015@yahoo.com

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close