ہندوستان

تکمیل حفظ کے موقع پر مدرسہ مدینۃ العلم میں دعائیہ تقریب کا انعقاد

علم کی دولت جسے حاصل ہوتی ہے اس پر اللہ کا بڑا احسان ہے: مولانا حسن الہاشمی

دیوبند، 5؍ دسمبر (رضوان سلمانی) ادارہ خدمت خلق دیوبند کے زیر اہتمام چلنے والے مدرسہ مدینۃ العلم میں دو بچوں کے تکمیل حفظ کے موقع پر ایک دعائیہ تقریب کا اہتمام کیا گیا ۔ مدرسہ سے حفظ مکمل کرنے والے محلہ گدی واڑہ کے رہنے والے محمد عارف، محمد اعظم کی دستار بندی بھی عمل میں آئی ۔ اس موقع پر ادارہ خدمت خلق کے بانی مولانا حسن الہاشمی نے اپنے خطاب میں کہا کہ علم کی دولت جسے حاصل ہوتی ہے اس پر اللہ کا بڑا احسان ہے ، یہ علم انہیں ہی عطا کیا جاتا ہے جو اس کے لائق ہوتے ہیں ، محنت کرتے ہیں اور نیکی کے ساتھ وقت گزارتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ انسان کو اچھی اور سچی زندگی گزارنی چاہئے ، دنیا میں بھی اس کی قدر ہے اور آخرت میں بھی اس کا اجر ہے ۔ مولانا نے قرآن حکیم کے تعلق سے کہا کہ قرآن حکیم وہ واحد کتاب ہے جو دنیا میں سب سے زیادہ پڑھی جاتی ہے ۔ قرآن کریم ایک عظیم الشان دولت ہے جس کو ہم آسانی سے پڑھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ قرآن کریم کے نازل ہونے میں جو وقت لگا وہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی سہولت کی وجہ سے 23سال میں نازل ہوا اور جو سب سے پہلے آیت نازل ہوئی تو وہ اقراء باسم ربک الذی خلق ہے اور یہ براہ راست حضرت جبرئیل علیہ السلام اس آیت کو لے کر غار حرا میں تشریف لائے اور حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم کو کہا پڑھو۔ مولانا حسن الہاشمی نے کہا کہ قرآن کریم میں 6666آیات ہیں ۔ انہو ں نے کہا کہ نبیوں کا تعلق حضرت جبرئیل علیہ السلام سے بطور خاص رہا ہے لیکن اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی عظمت کا کہ سب سے زیادہ ملاقاتیں حضرت جبرائیل علیہ السلام کی تمام انبیاء سے زیادہ رہی ہیں۔ حضرت عیسیٰ علیہ السلام کے پاس حضرت جبرئیل علیہ السلام پوری زندگی میں 10مرتبہ ، حضرت ادریس علیہ السلام کے پاس صرف 2مرتبہ ، حضرت ابراہیم علیہ السلام کے پاس 40مرتبہ ، حضرت نوح علیہ السلام کے پاس 50مرتبہ تشریف لائے ، جب کہ 23برس میں حضورپاک صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس 26ہزار مرتبہ تشریف لائے۔ قرآن کریم کی آیتیں حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس براہ راست بھی نازل ہوتی تھیں۔ مولانا نے کہا کہ قرآن کریم وہ واحد کتاب ہے جو دنیا میں سب سے پڑھی جاتی ہے، کوئی بھی کتاب چار پانچ مرتبہ پڑھنے کے بعد بوریت محسوس ہونے لگتی ہے مگر قرآن کریم کا معجزہ یہ ہے کہ اس کو ہزار مرتبہ بھی پڑھیں تو الگ ہی لذت محسوس ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس قوم اور انسان نے قرآن کریم کی حفاظت کرلی تو اللہ تبارک وتعالیٰ اس کی ہر چیز کی حفاظت فرماتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو بچے قرآن مجید پڑھ رہے ہیں ان کی عظمت کا اندازہ لگانا اتنا آسان نہیں ہے۔ جو والدین اپنے بچوں کو قرآن کریم کی تعلیم دلارہے ہیں اللہ تبارک وتعالیٰ قیامت کے روز ان کو ایسی پوشاک پہنائیں گے دنیا کی تمام دولت ان کے سامنے کچھ نہیں ہے۔ مولانا حسن الہاشمی نے کہا کہ قیامت کے روز جب نفسی نفسی کا عالم ہوگا لوگ پریشان ہوںگے تو اس وقت حافظ قرآن شفارش کریں گے جو قبول کی جائیںگی۔ انہوں نے کہا کہ قرآن کریم کی بعض آیتیں نازل ہونے کے وقت حق تعالیٰ کی جانب سے اہتمام بھی کیا گیا ۔ محدثین نے لکھا ہے کہ جب آیت الکرسی کی آیت نازل ہوئی تو شیاطین لاکھوں کی تعداد میں جمع ہوجاتے تھے اور آپس میں کہتے تھے کہ ایک ایسی آیت نازل ہونے جارہی ہے جو ہمارے لئے مصیبت بنیں گی اور اللہ تبارک وتعالیٰ نے بھی آسمان کے چاروں طرف مشرق ومغرب ، شمال وجنوب 70-70ہزار فرشتے متعین کئے گئے ، جب کہ حضرت جبرئیل علیہ السلام اتنے قوی تھے کہ قرآن کریم نے ان کے بارے میں فرمایا کہ وہ امین اورنہایت طاقت ور ہیں۔ مولانا نے کہا کہ ایک مرتبہ صحابی نے حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم سے دریافت کیا کہ کیا حضرت جبرئیل علیہ السلام کو آپ نے ان کی اپنی اصلی شکل میں دیکھا ہے تو حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ صرف ایک مرتبہ ان کی اصلی حالت میں دیکھا کہ ان کے پائوں زمین پر اور ان کا سر آسمان سے ٹکرارہا تھا اور ان کا جسم شمال سے جنوب تک پھیلا ہوا تھا ۔ اتنا قوی فرشتہ امانت میں خیانت نہ کرنے والا لیکن جب وہ آیت الکرسی کی آیت لے کر آرہے تھے تو اللہ تبارک وتعالیٰ نے شیاطین سے حفاظت کی تاکہ خلط ملط نہ کردیں۔ مولانا نے آخر میں کہا کہ علماء کا فرض بنتا ہے کہ مسلمانوں کو زندگی کے حقائق ، ملک کے حالات ، ماحول کے تغیرات اور تقاضوں سے باخبر اور روشناس رکھیں اور کوشش رہنی چاہئے کہ مسلم معاشرے کا رابطہ زندگی اور ماحول سے کٹنے نہ پائے۔ اگر دین اور مسلمانوں کا رابطہ زندگی سے کٹ گیا اور خیالی دنیا میں زندگی گزارنے لگیں تو پھر دین کی آواز بے اثر ہوگی۔ انہوں نے اس موقع پر اپیل کی کہ وہ اپنے بچوں کو عصری تعلیم کے ساتھ ساتھ دینی تعلیم ضرور دلائیں تاکہ وہ دنیا وآخرت میں کامیاب ہوسکیں۔ اس موقع پر مفتی وقاص ہاشمی، عاطف ہاشمی، ربیع ہاشمی، مولانا نصر الٰہی ، قاری مظاہر، مولانا سہیل ہاشمی ،قاری ریحان وغیرہ موجود رہے۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close