ہندوستان

مرکزی حکومت کے ذریعے دیہی علاقوں میں گیس دینے کا اسکیم فیل

مرکزی حکومت کے ذریعے دیہی علاقوں میں گیس دینے کا اسکیم فیل
علی گنج ( ممتاز عالم بلال نمائندہ خاص )
جموئی ضلع کے تحت علی گنج بلاک کے دیہی علاقوں میں لوگوں کے کام نہیں آرہے ہیں گیس سلنڈر ، علی گنج علاقوں میں ہر ماہ سلنڈر  گیس  کے تحت ملک کے تمام غریب گھرانوں کے وزیر اعظم ترقی منصوبے کے تحت گیس دینا حکومت کی پالیسی ناکام  دیکھ رہی ہے کیوں کہ1 مئی  2016 سے اس منصوبے کا جائزہ لیا گیا 2011 کے تحت معاشی و معاشرتی منصوبے کے تحت 2011 کے مطابق بی پی ایل خاندان والوں کو جو تین سالوں میں پانچ کروڑ لوگوں کو مفت سلینڈر بھرا گیس کے ساتھ و چولہے کے ساتھ دینا تھا عورتوں کی صحت کا خاص خیال رکھتے ہوئے وزیر اعظم نے ترقی منصوبے کے تحت دینے کا اعلان کیا تھا اس میں  چند لوگوں کو مفت گیس کنکشن کے ساتھ ایک آخری گیس سلنڈر اور دو شراکت میں شامل ہونے کی نشاندہی کی  گئی ہے۔ اس واقعے میں ووٹوں کو مضبوط کرنے کی بات سامنے آرہی ہے۔  ، ایندھن ، کوئلہ ، لکڑی اور گوئٹھا جلانے والے چولھےکو کھانا پکانے کا کام جاری ہے۔جس سے عورتوں کی صحت خراب ہو رہی ہے خراب پولوسشیں کی شکار خواتین کو گیس کے ذریعہ نکالنے کا عمل فیل نظر آرہا ہے۔ معمول کے مطابق مسلسل گیس کی قیمت میں اضافے سے غریب خاندان اور ہر ماہ  8 سو روپیہ کے حساب سے گیس خریدنا ہر کے بس کا نہیں ہے اسلئے حکومت گیس کی قیمت میں اعتدال پسندی اختیار کرے، ۔  اس طرح سے رات کے اوقات میں بھی ہر مہینے میں گیس لیتے ہیں اور اس پر دباؤ ڈالتے ہیں۔ اس نکامیابی کی طرف جاتا دیکھ رہا ہے گیس اُجوال منصوبہ، اس احتجاجی مظاہرہ میں  ریکھا دیوی ، پرشر آم  مانجھی ، اندر دیو مھتو، کریبن مانجھی ، سنہیت دیوی ، کاری دیوی ، پوجا دیوی ، ساؤ دیوی ، کالیچرن ساؤ ، لکشمی دیوی وغیرہ موجود تھیں، گیس کی قیمت میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔ ہزار روپیہ دیکر ماہانہ  گیس بھروانا مُشکل ہو گیا ہے۔ اس مہنگائی کے دور میں واقعے  گھر چلانا مُشکل ہو رہا ہے۔   پہلے جیسا  تھا ٹھیک ہی تھا ۔  سڈور دیہی علاقوں میں کچھ گھروں میں گیس سے  کھانا پکا یا جاتا ہے۔ اضافی گھروں میں لکڑی ، گوئٹھا میں ہی رسانیا کا کام جاری  ہے۔
مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close