کھیل

ورلڈ کپ کے دوران افغانستان کے اس کھلاڑی نے خاتون کے ساتھ ہوٹل میں کی ایسی حرکت ، ملی یہ بڑی سزا

افغانستان کے لئے آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کافی برا گزرا ۔ ٹیم سبھی نو میچ ہار گئی ۔ ساتھ ہی ساتھ کھلاڑیوں کو لے کر بھی تنازعات میں گھری رہی ۔ پہلے محمد شہزاد کو وطن واپس بھیجے جانے پر تنازع ہوا اوراب تیز گیند باز آفتاب عالم کو واپس بھیجے جانے کے قدم سے بھی پردہ اٹھ گیا ہے ۔ خبروں کے مطابق آفتاب عالم نے ہوٹل میں ایک مہمان خاتون کے ساتھ بدتمیزی کی تھی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ واقعہ ساوتھمپٹن کے اس ہوٹل میں پیش آیا تھا ، جہاں پر افغانستان کی ٹیم قیام پذیر تھی ۔ ویسے آئی سی سی نے عالم کے ٹورنامنٹ سے باہر ہونے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا تھا کہ انہیں مخصوص حالات میں بھیجا جارہا ہے جبکہ افغانستان کرکٹ بورڈ نے کہا تھا کہ آفتاب آئی سی سی کا قانون توڑنے کی وجہ سے واپس بلائے گئے ہیں ۔

ای ایس پی این کرک انفو کی خبر کے مطابق خاتون سے بدتمیزی کے علاوہ آفتاب عالم ہندوستان اور پاکستان کے درمیان میچ کے دوران بھی تنازعات میں گھر گئے تھے ۔ انہیں سیکورٹی اہلکاروں نے ایک سوئٹ سے ہٹایا تھا ، جس کے بعد افغانستان بورڈ نے انہیں سخت پھٹکار لگائی تھی ۔ ساتھ ہی ٹیم منیجر کو بھی معطل کردیا گیا تھا ۔ اس کے بعد معاملہ کی جانچ کیلئے ایک کمیٹی بنائی گئی تھی ۔ رپورٹ عام ہوتے ہی عالم کو ٹیم سے سسپینڈ کردیا گیا ۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ٹیم منیجر کو واقعہ کی جانکاری صحیح سے نہیں دینے کیلئے ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے ۔ انہوں نے بورڈ سے معاملہ چھپایا ۔ اطلاعات کے مطابق آئی سی سی کی انسداد بدعنوانی یونٹ نے آفتاب علم کو غلط رویہ کا قصوروار پایا ہے اور اس کی جانب سے افغانستان کرکٹ بورڈ کو رپورٹ بھیج دی گئی ہے ۔

خیال رہے کہ آفتاب عالم نے ورلڈ کپ میں اپنا آخری میچ ہندوستان کے خلاف 22 جون کو کھیلا تھا ، جس میں انہوں نے ایک وکٹ لیا تھا ۔ بتایا جاتا ہے کہ 23 جون کی صبح آئی سی سی کی انسداد بدعنوانی یونٹ نے افغانستان ٹیم کو ہوٹل میں ایک جگہ بلایا تھا ، لیکن عالم اس وقت نہیں آئے تھے ۔ وہ اپنے کمرے میں بھی نہیں تھے ۔ وہ لندن میں اپنے کسی رشتہ دار کے یہاں چلے گئے تھے ، جس کے بعد کوچ فل سمنس نے انہیں دو میچ کیلئے سسپینڈ کردیا تھا ۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close