تعلیم

کھجو رکی تاڑی پینا شرعا کیسا ھے؟ مفتی محمد عمران قاسمی

*کھجو رکی تاڑی پینا شرعا کیسا ھے؟* 
*سوال*: کیا کھجور کی تاڑی پی سکتے ہیں؟ مفتی صاحب جواب دے کر شکریہ کا موقع عنایت فرمائیں ۔
*المستفتی:محمدحارث* *ایڈیٹرہندوستان اردوٹائمز بنگلور*
       *باسمہٖ سبحانہ تعالیٰ*            *الجواب وباللّٰہ التوفیق**ومنہ الصدق والصواب*: کھجور کی تاڑی میں جب نشہ آجائے اس کا پینا حرام ہے اور جب نشہ نہ آئے تو اس کا پینا مُباح ہے۔ پھر بھی احتیاط بہتر ہے۔ ۔{فتاوی دارالعلوم دیوبند ،ایپ آن لائن، تحت مضمون / متفرقات – حلال و حرام سوال: 70 1520}     عن ابن عمر رضي اللّٰہ عنہما قال: قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم: کل مسکر خمر، وکل مسکر حرام۔ (صحیح مسلم ۲؍۱۶۷، مشکاۃ المصابیح ۲؍۳۱۷)      الشراب ما یسکر والمحرم منہا أربعۃ: الخمر وہي النيء من ماء العنب إذ غلا واشتدّ … والطلاء … والسکر … ونقیع الزبیب۔ (البحر الرائق / کتاب الأشربۃ  ۸؍۳۹۹-۴۰۱ ،زکریا دیوبند، وکذا في مجمع الأنہر ۴؍۲۴۴ المکتبۃ الغفاریۃ کوئٹہ، )      وعند محمد ما أسکر کثیرہ فقلیلہ حرام وہو نجس أیضًا، قالوا: وبقول محمد: نأخذ۔ (شامي ۶؍۷۰ زکریا، دیوبند).
*فقط واﷲتعالیٰ أعلم*
         *حرره العبد*    *محمد عمران غفرلہ*    *دارالإفتاءوالإرشاد*     *وائٹ فیلڈ بنگلور*
              *6/6/1440*
         *MB:9454007434*

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close