فقہ و فتاوی

پینٹ والی دیوار پرتیمم کرنا؟ مفتی محمد عمران قاسمی

🔹[ *کتاب الطھارة*] 🔹پینٹ والی دیوار پرتیمم کرنا؟ مفتی محمد عمران قاسمی

===============
*سوال(٢٠٧)* کیا فرماتے ہیں مفتیان کرام مسئلہ ذیل کے بارے میں جس دیوار پر پینٹ لگاھو ، اس دیوار پر تیمم کرسکتے ہیں یا نھیں ؟
*(المستفتی: شکیب انور*
*فلاحی مدھوبنی بھار)*
_________________
*باسمہ سبحانہ تعالیٰ*
*الجواب وباللٰہ التوفیق ومنہ الصدق والصواب*:جس دیوار کو پینٹ سے رنگ دیا گیا ہے، اس دیوار پر تیمم کرنا درست نہیں ہے، اس لئے کہ پینٹ رنگ ہے،مٹی کی جنس سے نہیں ،البتہ جس دیوار کو چونے یا سموسم سے رنگ دیا گیا ہے، اس پر تیمم درست ہے، اس لئے کہ چونا اور سموسم بھی مٹی کی جنس سے ہوتا ہے۔(فتاوی قاسمیہ :١٦٧/٥، اشرفی دیوبند)
وکذا بالخزف الخالص إلا إذا کان مخلوطا بما لیس من جنس الأرض أو کان علیہ صبغ لیس من جنس الأرض۔ (البحر الرائق، باب التیمم، زکریا ۱/ ۲۵۸، کوئٹہ ۱/ ۱۴۸، ہندیۃ، باب التیمم، الفصل الأول، زکریا قدیم ۱/ ۲۷، جدید ۱/ ۸۰))
*فقط واﷲتعالیٰ أعلم* ___________________
✒ *کتبہ :احقر*
*محمد عمران غفرلہ*
*دارالإفتاءوالإرشاد*
*وائٹ فیلڈ بنگلور*
*12/2/1441*
*مطابق*
*12/10/2019*
*ھفتہ*
*MB:9454007434*
*E-mail ID:*
*Imranqasmi1501@*
*gmail.com*
*You Tube channel:*
*التذکیر والتبشیر*
*Attazkeer*
*Wattabsheer*

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close