فقہ و فتاوی

معانقہ دائیں طرف سے کریں یابائیں طرف سے؟ مفتی محمد عمران قاسمی

معانقہ دائیں طرف سے کریں یابائیں طرف سے؟ مفتی محمد عمران قاسمی 
===============
*سوال(٢٣٨)*: السلام علیکم ! معانقہ دائيں طرف سے کرناچاہۓیا بائيں طرف سے کرناچاھۓ،افضل کیا ھے؟
*(المستفتی: اجمل احمد*
احمدآباد)
==============
باسمہ سبحانہ تعالیٰ
*الجواب وباللٰہ التوفیق ومنہ الصدق والصواب*:معانقہ میں تیامن (دائیں طرف) افضل ہے یا تیاسر (بائیں طرف)؟ صاحب احسن الفتاوی لکھتے ہیں:اس بارے میں کوئی صراحت نظر سے نہیں گذری، عام اصول کے مطابق تو تیامن کو ترجیح معلوم ہوتی ہے مگرمعانقہ کا منشا چونکہ ہیجان المحبة ہے جس کا محل قلب ہے اور صورت تیاسر میں جانبین کے قلوب باہم زیادہ قریب ہوتے ہیں اس لیے تیاسر راجح ہے۔(فتاوی دارالعلوم آن لائن : معاشرت-اخلاق وآداب /رقم السوال/#٦١٨٧،جولائ/١٩/٢٠٠٨)
فقط واﷲتعالیٰ أعلم ___________________
*کتبہ :احقر
محمد عمران غفرلہ
دارالإفتاءوالإرشاد
زیراھتمام جامع مسجد
وائٹ فیلڈ بنگلور

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close