عجیب و غریب

شہریت قانون مخالف مظاہرہ میں ملکیت کو نقصان پہنچانے والے کو گولی مار دیں گے : دلیپ گھوش

مغربی بنگال بی جے پی صدر دلیپ گھوش نے شہریت قانون کے خلاف مظاہرہ کرنے والوں کے خلاف متنازعہ بیان دیا ہے۔ انھوں نے کہا
کہ عوامی ملکیت کو نقصان پہنچانے والے لوگوں کو یو پی کی طرح گولی مار دی جائے گی۔
کولکاتا ۔ 13 جنوری 2019
مغربی بنگال بی جے پی کے صدر دلیپ گھوش نے شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور این آر سی کے خلاف مظاہرہ کرنے والے لوگوں سے متعلق انتہائی متنازعہ بیان دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ دیدی (ممتا بنرجی) کی پولس نے ان لوگوں کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی جنھوں نے عوامی ملکیت کو نقصان پہنچایا تھا۔ اتر پردیش، آسام اور کرناتک میں ہماری حکومت نے ایسے لوگوں کو کتوں کی طرح مارا ہے۔ دلیپ گھوش نے مزید یہ بھی کہا کہ ’’آپ یہاں آئیں گے، ہمارا کھانا کھائیں گے اور یہاں رہ کر عوامی ملکیت کو نقصان پہنچائیں گے۔ کیا یہ آپ کی زمینداری ہے؟ ہم آپ کو لاٹھی سے پیٹیں گے، گولی مار دیں گے، جیل میں بند کر دیں گے۔‘‘

ANI

@ANI
Dilip Ghosh, West Bengal BJP President: Didi’s (Mamata Banerjee) police didn’t take action against the people who destroyed public properties as they are her voters. Our govt in UP, Assam and Karnataka has shot these people like dogs. (12.1.2020)

دلیپ گھوش نے مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ سال ریاست میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ہوئے مظاہروں میں عوامی ملکیت کو کافی نقصان پہنچایا گیا لیکن ممتا بنرجی نے مظاہرین پر نہ ہی لاٹھی چارج کرایا اور نہ ہی گولی چلانے کا حکم دیا، ایسا اس لیے کیونکہ وہ لوگ ان کے ووٹر ہیں۔ انھوں نے آگے کہا کہ ’’جو لوگ ملکیت کو نقصان پہنچا رہے ہیں کیا یہ ان کے باپ کی جاگیر ہے۔ مظاہرین ٹیکس دینے والوں کے پیسوں سے بنی عوامی ملکیت کو نقصان کس طرح پہنچا سکتے ہیں۔ اتر پردیش، آسام اور کرناٹک حکومت نے ملک مخالف عناصر پر گولی چلا کر بالکل صحیح کیا۔‘‘

اس دوران انھوں نے دعویٰ کیا کہ ملک میں دو کروڑ مسلم درانداز ہیں۔ ایک کروڑ تو صرف مغربی بنگال میں ہیں اور ممتا بنرجی انھیں بچانے کی کوشش کر رہی ہیں۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close