دیوبند

کروڑوں روپے بقایا ہونے پر محکمہ بجلی نے سات گائوں کی بجلی کاٹی ، لوگوں میں افراتفری

دیوبند، 16؍ جنوری (رضوان سلمانی) بجلی کے بلوں کا کروڑوں روپے بقایا ہونے سے محکمہ بجلی نے دیوبند علاقے کے سات گائوں کی بجلی کاٹ دی ہے ، گائوں کی بجلی کاٹنے کی اطلاع پر متأثرہ گائوں کے باشندوں نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے ایس ڈی ایم کو میمورنڈم دے کر وزیر اعلیٰ کو آگاہ کرنے کا انتباہ دیا ہے۔محکمہ بجلی کے افسران گزشتہ کافی وقت سے بجلی چوری اور بقایا وصولنے کے لئے برابر مہم چلارہے ہیں ۔ حکومت کی جانب سے بجلی کے بقائے کی ادائیگی جمع کرانے کے لئے نئی نئی اسکیمیںچلاکر بقایا جمع کرانے کے لئے صارفین کو متعدد مرتبہ موقع دیا گیا ہے لیکن اس کے باوجود بھی پاور کارپوریشن حکومت اور محکمہ کی منشا کے مطابق بقایا وصول کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکا ہے۔ جس کے سبب محکمہ بجلی کے افسران نے دیوبند علاقے میں اب تک کی سب سے بڑی کارروائی کی ہے۔ ایس ڈی او امت کمار تیاگی نے بتایا کہ بجلی کے بقایا وصولنے کے لئے کارپوریشن کی جانب سے آسان قسط اسکیم چلائی گئی تھی اس کے باوجود بھی 19ہزار 500صارفین میں سے صرف 2700صارفین کے ذریعہ ہی رجسٹریشن کرایا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سب سے زیادہ بقایا ہونے کی وجہ سے گائوں نعمت پور ، نونا بڑی، رام نگر، کرنجالی، تھیتکی، گوپالی اور بابو پور نگلی کی بجلی کاٹ دی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یہاں کے صارفین پر کارپوریشن کا ایک کروڑ سے زائد بقایا ہے ،ان کے مطابق متعدد مرتبہ محکمہ بجلی کی جانب سے کیمپ بھی لگائے گئے، قسط کے طورپر اسکیم بھی چالو کی گئی لیکن صارفین نے بجلی کے بقائے کو جمع کرنے میں کوئی دلچسپی نہیں دکھائی۔ تیاگی نے بتایا کہ بہت سے صارفین ایسے بھی ہیں جنہوں نے گزشتہ 10سال کے دوران ایک بھی بل جمع نہیں کرایا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اس طرح کی کارروائی آگے بھی جاری رہے گی۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close