اہم خبریں

جموں وکشمیرمیں اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان نہ ہونے پرعمرعبداللہ نے اٹھائے سوال

جموں وکشمیر کے سابق وزیراعلیٰ اورنیشنل کانفرنس کے نائب صدرعمرعبداللہ نے ٹوئٹ کرکے کہا ’سال 1996 کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب جموں وکشمیر میں وقت پراسمبلی انتخابات نہیں ہوں گے۔ آئندہ بار وزیراعظم مودی کی طاقتورقیادت کی تعریف کرتے وقت اس بات کو یاد رکھیں‘۔

انہوں نے مزید لکھا کہ ’2014 میں  زبردست سیلاب کے باوجود ہم نے لوک سبھا الیکشن اوراسمبلی انتخابات وقت پردیکھے تھے۔ یہ دکھاتا ہے کہ بی جے پی اور سابقہ بی جے پی – پی ڈی پی حکومت نے جموں وکشمیر کا کتنا برا حال کیا ہے۔

عمر عبد اللہ

امید کی جارہی تھی کہ جموں وکشمیر اسمبلی انتخابات کی تاریخ کا بھی اعلان کیا جائے گا تاہم ایسا نہیں ہوا۔ دراصل  جموں و کشمیر اسمبلی بھی تحلیل ہوچکی ہے، اس لئے کمیشن مئی میں ختم ہورہی 6 ماہ کی مدت کے اندر یہاں بھی الیکشن کرانے کیلئے پابند ہے۔ ایک رائے ہے کہ جموں و کشمیراسمبلی انتخابات بھی لوک سبھا انتخابات کےساتھ ہی ہوں گے۔

واضح رہے کہ آج ہی الیکشن کمیشن نے عام انتخابات 2019 کی تاریخوں کا اعلان کیا ہے۔ جس میں آندھرا پردیش، اروناچل پردیش، سکم اوراوڈیشہ کے اسمبلی انتخابات کے لئے ووٹنگ  کی تاریخوں کا بھی اعلان کیا گیا ہے جبکہ جموں وکشمیرمیں اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔  جبکہ تمل ناڈو سمیت تمام ریاستوں میں ضمنی انتخابات کے لئے ووٹنگ لوک سبھا الیکشن کے ساتھ ہی ہوگی۔ تمل ناڈو کی سبھی 21 خالی اسمبلی سیٹوں پرلوک سبھا الیکشن کے لئے ہونے والی ووٹنگ کے ساتھ ہی ہوگی۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close