بہار و سیمانچل

حاجی فیروز کی بھانجی سیرت فاطمہ کی شادی میں ہوئے شریک معزز قارئین

حاجی فیروز کی بھانجی سیرت فاطمہ کی شادی میں ہوئے شریک معزز قارئین
جموئی ( محمد سُلطان اختر ہندوستان اردو ٹائمز )
جموئی ضلع کے سکندره بلاک کے ذخیرہ گاؤں میں ایک خوش گوار ماحول کے ساتھ شمیم خان کی نور نظر سیرت فاطمہ کی ہوئی شادی، جناب وسیم خان بن ظفیر خان مرحوم موضع ملّا چک پوسٹ وارث علی گنج ضلع نوادہ کے ساتھ ہوئی
نکاح امام و خطیب ذخیرہ جامع مسجد حافظ شاہ نور صاحب بھاگل پوری نے پڑھائی نکاح کے بعد براتیوں کی تعداد کم و بیش تین سو کے قریب تھی جسمیں پچاس مستورات بھی آئیں تھیں سبھوں کو بحسن وخوبی رخصت کیا گیا اس دعوت و تقریب کی خاص بات یہ تھی کہ اس تقریب میں سماجی و سیاسی جماعتیں اور اُنکے تمام لواحقین کی حاضری ہوئی جو قابل تعریف ہے خود شمیم خان سابق ضلع پریشد رہ چکے ہیں جس کی وجہ سے سیاسی جماعتوں کا ایک قافلہ تھا اور اسی طرح سیرت فاطمہ کے ماموں حاجی فیروز صاحب اخلاقی اوصاف کی وجہ سے دعوت تقریب میں سبھوں نے لببیک ہی نہیں کہا بلکہ اس جوڑی کو مبارک بادی پیش کرنے دور دور سے سفر کرکے آئے،دور دور سے سفر کرنے والوں میں ماموں اور رشتےداروں کے علاوہ محمد ضیاء الدین صاحب ٹاٹا،روح اللہ ٹا ٹا،غلام حقّانی صاحب دربھنگہ،حاجی وصی اختر راور کیلا،جسے کانام سرِ فہرست ہے،اسی طرح سیاسی جماعتوں میں جناب فاروق اعظم خان جد یو نیتا پکری براوان نواده،نظیر بیگ صاحب ہلسی،مقصود خان سابق مکھیا،شوکت خان مکھیا،وغیرہ کے نام قابلِ ذکر ہیں،اس تقریب میں مشہور شخصیات میں،حاجی نوروز خان،افروز خان،حسنات خان،پروفیسر رضوان خان،آصف اقبال،غلام سرور نمائندہ انقلاب جموئی کی شرکت ہوئی اور اس نو عروس جوڑي کو مباربادی کے ساتھ ساتھ خوب دعائیں بھی دی
مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close