بہار و سیمانچل

نوادہ دریاشاہ قبرستان مغلاکھار کے پاس بنڈیلا باغ تیسرے دن بھی احتجاج جاری شاہین باغ کے طرز پر چل رہا ہے نوادہ کا احتجاج

نوادہ ( محمد سُلطان اختر ایچ یو ٹی ) نوادہ شہر کے لوگوں کے جذبے کو سلام،بہت ہی اچھا احتجاج کر رہے ہیں آج احتجاج کا تیسرا دن ہے،مرد و خواتین چھوٹے بڑے بچے سبھی اپنی اپنی ذمےداری سمجھ کر دھرنا میں آتے چوبیس گھنٹے کا وقت باری باری لگاتے ہیں اور اس احتجاج کو کامیاب بنانے میں جوڑے ہیں،
اعلان کے مطابق مغلاکھار کے دریا شاہ قبرستان کے پاس بنڈیل باغ میں مرکزی حکومت کے کالے قانون کے خلاف غیر معینہ مدت کیلئے جب تک موجودہ حکومت یہ قانون واپس نہ لے لے دھرنا مظاہرہ جاری رہیگا جس کا آغاز کردیا گیا ہے جس میں شہرنوادہ و مضافات سے کافی تعدادمیں بلاتفریق مذہب و ملت لوگوں نےشرکت کی اس پروگرام سے ملک کے امن وسلامتی کی دعاء بھی کی گئی، واضح ہو کہ اس احتجاجی مظاہرہ کا پروگرام کسی سیاسی پارٹی کے بینر تلے نہیں رکھا گیا ہے بلکہ عوامی سطح پہ یہ پروگرام رکھا گیا ہے جس میں این آر سی، سی اے اے، این پی آر جیسے نفرت وعصبیت پہ مبنی قانون کے خلاف مرد و خواتین کے ہاتھوں میں تختیاں اور بینر تھے اس پروگرام کو عملی جامہ پہنانے میں ندیم حیات، شمیم الدین، طارق بابا، جسیم الدین وارڈ کاؤنسلر، علا ؤ الدین، فخر الدین، حافظ عبداللہ رضوی، ظہیر انور وغیرہ پیش پیش نظر آئے،آج تیسرے دن کی حاضری میں مولانا جہانگیر القادری اور قمر الباری دھمولوی محمد رضوان،فیض الحق کے نام قابل ذکر ہیں،

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close