بہار و سیمانچل

شہری ترمیمی بل آئین مخالف ہے اس بل کو فوری طور پر واپس لے حکومت:کرشن موہن 

آئین مخالف  شہریت ترمیمی بل کےخلاف سی پی آئی ایم ایل اور انصاف منچ ریاست گیر سطح پر احتجاج کیا

مظفرپور:10/دسمبر (پریس ریلیز ) شہریت ترمیمی بل دستور کے بنیادی اصولوں کے خلا ف اور مذہبی بنیاد پر ملک کو تقسیم کر نےوالاہے یہ باتیں آج یوم انسانی حقوق کے موقع پر سی پی آئی ایم ایل اور انصاف منچ کے بینر تلے ملک گیر سطح پر نکالے گئے احتجاجی مارچ سے خطاب کرتے ہوئے سی پی آئی ایم ایل مظفرپور کے ضلعی سیکریٹری کرشن موہن نے کہیں کرشن موہن نے کہا کہ شہری ترمیمی بل اور این آر سی سے ملک تباہ ہوجائےگا اس لیے  اب اس طرح کی تفرقہ بازی کو برداشت کرنے کی ملک میں قوت نہیں ہے۔ انصاف منچ بہار کے ریاستی صدر سورج کمار سنگھ نے مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے  حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ شہریت ترمیمی بل کو واپس لے، کیونکہ یہ مذہب کی بنیاد پر لوگوں کو تقسیم کرنے والا ہے، جب کہ ہمارے ملک کا دستور سیکولر اور جمہوری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس بل کی مخالفت میں اپنی آواز بلند کرنے کے لیے مظفرپور کی سڑکوں پر مارچ کررہےہیں ، کیونکہ یہ بل دستور کے بنیادی اصولوں کے خلاف ہے اور مذہبی بنیاد پر ملک کو تقسیم کرنے والا ہےسی پی آئی ایم ایل مظفرپور کے ضلعی کمیٹی کےرکن پروفیسر اروند کمار ڈے اور انصاف منچ بہار کے ریاستی نائب صدر ظفر اعظم  نے کہاکہ شہری ترمیمی بل  اور این آر سی  واضح طور پر ملک کو تباہی کی طرف لے جانے کا ایک ذریعہ ہے۔ظفر اعظم نے مذیدکہاکہ یہ بل اس ملک کے دستور کے منافی ہے۔ اس لیے ہم اس بل کی مخالفت کرتے ہیں اور سرکار سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اس واپس لے اور ملک کو تباہی کی طرف لے جانے والے ہر عمل سے گریز کرے۔یہاں یہ واضح ہوکہ سی پی آئی ایم ایل اور انصاف منچ نے شہری ترمیمی بل اور این آر سی کو خارج کرتے ہوئے آج ریاست گیر سطح پر احتجاج کیا اسی کے تحت آج مظفرپور میں بھی واقع ہری سبھا چوک سی پی آئی ایم ایل دفتر سے ایک زبردست احتجاجی مارچ نکالا گیا جو کلیانی ،موتی جھیل،اسٹیشن روڈ، صدراسپتال روڈ، کمپنی باغ ہوتے ہوئے ضلعی مجسٹریٹ دفتر کے سامنے پہنچا اس درمیان مظاہرین نے پرجوش انداز میں شہری ترمیمی بل واپس لو،آئین مخالف بل واپس ،این نہیں مانیں گے وغیرہ نعرہ بلند کیا احتجاج سترودھن سہنی، منوج یادو،یونائیٹڈ مسلمس یونائیٹڈ فرنٹ بہار کے ریاستی صدر جاوید قیصر، فہد زماں، اسلم رحمانی، اکبر اعظم صدیقی، مطلوب الرحمن، ارشد ،عرشی، نوشاد عالم ،شفیق،دیپک کمار سنگھ، راہل سنگھ، کے علاوہ سیکڑوں کی تعداد میں مرد خواتین شامل تھے
مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close