بہار و سیمانچل

ڈویژنل کمشنر وزیراعلیٰ کی آمد کے لئے نوادہ میں پرجوش

نوادہ (محمد سلطان اختر ہندوستان اردو ٹائمز) ڈویژنل کمشنر وزیراعلیٰ کی آمد کا جائزہ لینے ضلع نوادہ کے رجولی پہنچ گئے ، بہت سی ہدایات دیں۔ وزیر اعلی نتیش کمار کی جل جیون ہریالی سفر  ایک حصے کے طور پر ہے رجولی میں اپنے ممکنہ پروگرام کی تیاریوں کا جائزہ لینے کے لئے مگدھ  ڈویژنل کمشنر اتوار کے روز رجولی پہنچے۔
 وزیراعلیٰ کی آمد پر  ڈویژنل کمشنر اسنگبہ چوبہ آؤ نے دیگر عہدیداروں کے ساتھ رجولی کے پراچک گاؤں کا دورہ کیا۔  وزیر اعلی کی پانی ہی زندگی ہے کہ سبزنگ مہم کے تحت انہوں نے ندی اور تالاب کی تزئین و آرائش کا بھی معائنہ کیا۔  اس کے ساتھ ہی  چیف منسٹر کے سات فیصلوں کے منصوبوں کو زمین پر لانے اور پنچایت میں صد فیصد کو نافذ کرنے کے لئے کمشنر خود سائٹوں کا معائنہ کر رہے ہیں۔
 اہم بات یہ ہے کہ 20 دسمبر کو نوادہ کے رجولی میں وزیر اعلی نتیش کمار کی آمد کا امکان یقینی بنایا  جارہا ہے۔  ڈویژنل کمشنر نے ڈی ایم کوشل کمار سے متعدد عہدیداروں کے ساتھ پراچک گاؤں میں ترقیاتی اور زراعت کی اسکیموں کے بارے میں دریافت کیا۔  اس دوران انہوں نے ڈی ایم اور دیگر عہدیداروں کو بہت ساری ہدایات دیں۔
 ڈویژنل کمشنر نے گاؤں میں جاری اسکیموں کے جائزے کے دوران پانی ہی زندگی ہے ہریالی کانفرنس سے خطاب کرنے کے لئے ہرڈیا پرائمری ہیلتھ سنٹر کم ہیلتھ اینڈ ویلنس سنٹر کے احاطے میں تعمیر ہونے والے پلیٹ فارم کی تعمیراتی کام اور ہیلی پیڈ سائٹ کا بھی جائزہ لیا۔  کمشنر پراینچک گاؤں کے ہر گھر میں گئے اور ترقی کے لئے جاری کاموں کے بارے میں قریب سے استفسار کیا۔
 انہوں نے سب کو احتساب کے ساتھ کاموں کو مکمل کرنے کی ہدایت بھی کی۔  انہوں نے پانی ہی زندگی ہے ہریالی کے کام کو تیز کرنے کی ہدایت بھی کی۔  کمشنر نے وزیراعلیٰ کی آمد سے قبل ہردیہ میں پھلووریا حوض میں تعمیر ہونے والے واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کا بھی جائزہ لیا۔  اس دوران جندال  کمپنی کے افسران کو جلد سے جلد کام مکمل کرنے کی ہدایت کی۔
 براہ کرم یہاں بتائیں کہ راجیو گاندھی کثیر مقصدی دیہی پانی کی فراہمی اسکیم کا افتتاح وزیر اعلی نتیش کمار کریں گے۔  اس اسکیم کے ذریعہ رجولی بلاک کی 10 پنچایتوں کے تقریبا 90 گاؤں کو پینے کا صاف پانی فراہم کیا جائے گا۔  اس موقع پر ڈی ڈی سی وایب چودھری ، ایس ڈی او چندرشیکھر آزاد اور سی او سنجے کمار جھا کے علاوہ دیگر عہدیدار موجود تھے۔
مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close