بنگلور

بنگلور میں ۲۰۰ سے زائد غیر مسلموں نے ۱۷۰ سال پرانی مسجد کاد ورہ کیا

بنگلور۔ ۲۰؍جنوری: ویسے تو کسی بھی مذہب اور جنس سے تعلق رکھنے والے شخص پر مسجد میں جانے پر کوئی پابندی نہیں ہے لیکن بنگلور میں جو کل دیکھا گیا وہ واقعہ ہندوستان میں تاریخی حیثیت رکھتا ہے۔ کل بنگلور کی مسجد میں رحمت گروپ نے دو سو غیر مسلم حضرات کو ’ایک دن کے لئے میری مسجد میں تشریف لائیں‘ پروگرام کے تحت 170 سال پرانی مودی مسجد میں مدعو کیا۔ رحمت گروپ کے اس دعوت نامہ کے تحت آنے والے غیر مسلموں میں ہندو، عیسائی اور کچھ سکھ حضرات بھی تشریف لائے۔ملک کے موجودہ ماحول میں اس قابل ستائش قدم کا مقصد مسجد میں غیر مسلموں کو مدعو کر کے بین مذاہب تعلقات کو فروغ دینا تھا۔ اس دعوت نامہ کا مقصد یہ بھی تھا کہ اسلام کے تعلق سے غلط فہمیوں کو دور کیا جائے اور اسلام کو سمجھایا جائے۔ویسے تو کسی بھی مذہب اور جنس سے تعلق رکھنے والے شخص پر مسجد میں جانے پر کوئی پابندی نہیں ہے لیکن بنگلور میں جو کل دیکھا گیا وہ واقعہ ہندوستان میں تاریخی حیثیت رکھتا ہے۔ کل بنگلور کی مسجد میں رحمت گروپ نے دو سو غیر مسلم حضرات کو ’ایک دن کے لئے میری مسجد میں تشریف لائیں‘ پروگرام کے تحت 170 سال پرانی مودی مسجد میں مدعو کیا۔ رحمت گروپ کے اس دعوت نامہ کے تحت آنے والے غیر مسلموں میں ہندو، عیسائی اور کچھ سکھ حضرات بھی تشریف لائے۔ملک کے موجودہ ماحول میں اس قابل ستائش قدم کا مقصد مسجد میں غیر مسلموں کو مدعو کر کے بین مذاہب تعلقات کو فروغ دینا تھا۔ اس دعوت نامہ کا مقصد یہ بھی تھا کہ اسلام کے تعلق سے غلط فہمیوں کو دور کیا جائے اور اسلام کو سمجھایا جائے۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close