اہم خبریں

راہل گاندھی نے قبول کیا ستیہ پال ملک کا چیلنج ، عوام اور لیڈروں سے ملنے کی مانگی آزادی !

راہل گاندھی نے قبول کیا ستیہ پال ملک کا چیلنج ، عوام اور لیڈروں سے ملنے کی مانگی آزادی ! 
جموں و کشمیر کے گورنر کے ذریعہ طیارہ بھیجے جانے کے آفر پر راہل گاندھی نے ٹوئٹ کیا ہے کہ وہ اس پیشکش کو قبول کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اپوزیشن پارٹیوں کا نمائندہ وفد اور وہ کشمیرو لداخ کا دورہ کریں گے۔

نئی دہلی ۔ 13 اگست 2019 کانگریس رکن پارلیمنٹ اور سابق پارٹی صدر راہل گاندھی نے جموں و کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک کے چیلنج کو قبول کر لیا ہے۔ راہل گاندھی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ "اپوزیشن لیڈروں کا ایک گروپ اور میں جموں و کشمیر اور لداخ کا جائزہ لینے سے متعلق آپ کی دعوت کو قبول کرتے ہیں۔”

Rahul Gandhi
@RahulGandhi
Dear Governor Malik,

A delegation of opposition leaders & I will take you up on your gracious invitation to visit J&K and Ladakh.

We won’t need an aircraft but please ensure us the freedom to travel & meet the people, mainstream leaders and our soldiers stationed over there.
Quote Tweet

NDTV
@ndtv
· 19h
"Will send you plane, come here, observe”: J&K Governor Satya Pal Malik to Rahul Gandhi (link: https://www.ndtv.com/…/will-send-you-plane-come-here-observ…ndtv.com/india-news/wil
Show this thread
Image
10:13 AM · Aug 13, 2019

راہل گاندھی نے اپنے ٹوئٹ میں یہ بھی لکھا ہے کہ اس دورہ کے لیے ہمیں کسی خاص طیارے کی ضرورت نہیں ہے، بس آپ وادی میں ہمارے گھومنے اور عام لوگوں سے ملنے کی آزادی کو یقینی کر دیں۔ وہ مزید لکھتے ہیں کہ "گورنر مین اسٹریم لیڈروں اور وہاں تعینات جوانوں سے ہماری ملاقات کو یقینی بنائیں۔”

اس سے قبل راہل گاندھی نے وادی میں تشدد کی خبریں آنے کی باتیں کہی تھی۔ انھوں نے میڈیا کے حوالے سے خبروں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ کچھ جگہوں پر تشدد کی خبریں ہیں۔ انھوں نے یہ بھی کہا تھا کہ اس سلسلے میں پی ایم مودی کو شفاف طریقے سے اس معاملے پر اظہار خیال کرنا چاہیے۔ راہل گاندھی کے اسی بیان پر جموں و کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے کہا تھا کہ وہ کانگریس کے سابق صدر کو وادی کا دورہ کرانے اور زمینی حالات کا جائزہ لینے کے لیے طیارہ بھیجیں گے۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close