اشعار و غزل

طیبہ کو تصور میں ہم لائے ہوئے ہیں!مولانامحمد جہانگیرعالم مھجؔورالقادری

طیبہ کو تصور میں ہم لائے ہوئے ہیں

اب اپنے  مقدر پہ تو اترائے ہوئے ہیں
کیوں مہکے ہوئے کوچہ وبا زار ہیں یارو!
تشریف محمدﷺمرے کیالائے ہوئےہیں
بوبکرہوں،فاروق ہوں، عثماں کہ عــــلی ہوں
رتبہ مرے آقاسے سبھی پائے ہوئے ہوئے ہیں
دل اپنـــا منور ہوا جس ماہِ مُبیــــں  سے
یہ ذرے اسی مہــــــر کے چمـــــــکائے ہوئےہیں
اب ہندی مُسلمــــــانوں پہ للــــــــہ کرم ہو
بگڑے ہوئے حالات ســــــے گھبرائے ہوئےہیں
چھیڑو نہ نکیرو!مجھے تم ،میـــــری لحد میں
کرنے دوزیارت مُجھے،وہﷺ آئے ہوئے ہیں
مھـــــــــجوؔر پہ نظرِکرم ہوجائے خــــدارا
حالاتِ  زمـــــانہ کے یہ ٹھکرائے ہوئے ہیں
ٖ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔از قلم ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
مولانامحمد جہـــــانگیرعـــــالم مھجؔورالقـــــادری،
ضلعی صدر تنظــــــیم عُلمـــــائے حق ضلع نوادہ
رابطہ نمبر 9801511673،7992330772
مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close