اشعار و غزل

 سورج ” سے متعلق چند متفرق اشعار”  ! پیشکش : طارق نوادوی

 سورج ” سے متعلق چند متفرق اشعار”  ! پیشکش : طارق نوادوی 

سورج کے ڈوب جانے کا مجھ کو بھی ہے ملال
ماتم کناں نہ ہوں وہ،جلائیں چراغ اب

————————————————-
سورج کا میں طواف تو کرتا ہوں اس لئے
دنیا مجھے بھی چاند ستارہ کہا کرے
————————————————-
میں تو سورج ہوں چمکتا ہی رہوں گا آخر
راکھ ہو جائیں گے یہ مجھ سے الجھنے والے

————————————————–
ڈوبا جو میرے عشق کا سورج تو دوستو
دوبارہ زندگی میں اجالا نہیں ہوا

————————————————
مانا کہ اس کی ذات سے ہے زندگی مگر
سورج کبھی بھی پیار سے دیکھا نہیں گیا

————————————————
سورج نے اگر چھوڑ دیا دیکھنا اُس کو
اُس چاند کو پھر چاند بھلا کون کہے گا

————————————————

تپتا رہا بخار سے سورج تمام دن
آخر میں گر پڑا وہ سمندر کی گود میں

———————————————

رہتا ہوں میں فلک پہ بڑی آن بان سے
سورج کسی مکان میں رہتا کبھی نہیں
————————————————–

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close